WhatsApp-Image-2022-06-22-at-12.42.50-PM.jpeg

اگرآپ کو ان جسمانی مسائل کا سامنے ہے؟ تو دودھ پینے سے گزیز کریں

ماہرین صحت کا کہنا ہےکہ کچھ لوگوں کے لئے دودھ پینا خطرناک بھی ثابت ہو سکتا ہے، صحت کی کچھ ایسی حالتیں ہیں جن میں اگر دودھ پیا جائے تو فائدہ کے بجائے نقصان کا باعث بنتا ہے۔

یہاں ہم آپ کو کچھ ایسے ہی صحت کے مسائل کے بارے میں بتا رہے ہیں، جن میں دودھ پینے سے آپ کی حالت خراب ہو سکتی ہے ۔

۔ جسم میں اگر سوزش ہو تو۔۔۔

ماہرغذائیت کے مطابق اگر کسی شخص کے جسم میں سوزش یا انفلیمیشن کا مسئلہ ہے تو دودھ پینا اس کی صحت کو خراب کر سکتا ہے۔

اس کی وجہ یہ ہے کہ دودھ میں سیرشدہ چکنائی ہوتی ہے۔ سیرشدہ چربی جسم میں لپڈ پولی سیکرائڈزنامی سوزش کے مالیکیولز کے جذب کو بڑھاتی ہے۔ جس کی وجہ سے یہ سوزش کو بڑھانے کا سبب بنتا ہے۔

 اگر جگر کی کوئی خرابی ہے تو۔۔۔۔

اگر کوئی شخص جگر سے متعلق مسائل جیسے کہ فیٹی لیور اور جگر کی سوزش کا شکار ہے تو اسے دودھ پینے سے گریز کرنا چاہیے۔

اس صورت حال میں اگر آپ دودھ پیتے ہیں تو آپ کا جگر دودھ کو صحیح طریقے سے ہضم نہیں کر پاتا، جس سے جگر میں سوزش کا مسئلہ بڑھ سکتا ہے۔

اس کے علاوہ دودھ ٹھیک سے ہضم نہ ہونے کی وجہ سے پیٹ کے مسائل پیدا ہوتے ہیں۔ جس سے اسہال وغیرہ ہو سکتے ہیں۔

 ۔ اگر آپ کو دودھ سے الرجی ہے تو۔۔۔

کچھ لوگوں کو دودھ سے الرجی ہوتی ہے۔ وہ لوگ جب بھی دودھ پیتے ہیں توان کی طبیعت خراب ہونے لگتی ہے یا ان کے جسم میں الرجی کا ردعمل ہوتا ہے۔

دودھ کی الرجی کے اس مسئلے کو لییکٹوزعدم برداشت کہا جاتا ہے۔ ان لوگوں کو دودھ میں موجود شکرجسے لیکٹوز بھی کہا جاتا ہے اس کو ہضم کرنے میں پریشانی ہوتی ہے۔

اگر یہ لوگ دودھ پیتے ہیں تو اس سے اسہال اور گیس جیسے مسائل پیدا ہوتے ہیں۔ ان لوگوں کو دودھ بالکل چھوڑ دینا چاہیے۔

۔ پیٹ خراب ہوتو۔۔۔۔

اگر کوئی شخص پیٹ سے متعلق مسائل جیسے پیٹ میں گیس یا  قبض وغیرہ میں مبتلا ہے تو اس حالت میں دودھ پینا ان علامات کو مزید شدید بنا سکتا ہے۔

اس لیے کوشش کریں کہ پیٹ خراب ہونے پر دودھ نہ پئیں۔ کیونکہ یہ آپ کے معدے کو مزید اپ سیٹ کرسکتا ہے۔



Source link