اسرائیلی وزیرِ خارجہ امارات کے دورے پر روانہ، سفارت خانے کا افتتاح کریں گے



اسرائیل کے وزیرِ خارجہ یائر لیپڈ دو روزہ دورے پر متحدہ عرب امارات روانہ ہو گئے ہیں جہاں وہ ابوظہبی میں سفارت خانے کے علاوہ دبئی میں قونصل خانے کا افتتاح کریں گے۔

برطانوی خبر رساں ادارے ‘رائٹرز’ کے مطابق اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے درمیان گزشتہ برس سفارتی تعلقات قائم ہونے کے بعد یہ اسرائیل کے کسی بھی وزیر کا پہلا دورہ ہے۔

دورۂ متحدہ عرب امارات سے قبل یائر لیپڈ نے ٹوئٹر پر اپنی ایک تصویر شیئر کرتے ہوئے اس دورے کو تاریخی قرار دیا ہے۔

برطانوی نشریاتی ادارے ‘بی بی سی’ کے مطابق دورۂ متحدہ عرب امارات کے دوران اسرائیلی وزیرِ خارجہ اپنے اماراتی ہم منصب شیخ عبداللہ بن زید النہیان سے بھی ملاقات کریں گے۔

یاد رہے کہ امریکہ کے سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی کوششوں سے متحدہ عرب امارات نے اسرائیل کے ساتھ سفارتی تعلقات کے قیام کا اعلان کیا تھا۔

گزشتہ برس اسرائیل سے تعلقات قائم کرنے والے دیگر اسلامی ملکوں میں بحرین، سوڈان اور مراکش بھی شامل تھے۔

اسرائیلی وزیرِ خارجہ کے دورے کو خاصی اہمیت دی جا رہی ہے۔ یہ دورہ ایسے موقع پر ہو رہا ہے جب حال ہی میں اسرائیل میں نئی حکومت کا قیام عمل میں آیا ہے۔

سابق وزیرِ اعظم بن یامین نیتن یاہو کے 12 سالہ اقتدار کا خاتمہ کرتے ہوئے اپوزیشن کی آٹھ جماعتوں نے یائر لیپڈ کی قیادت میں نئی حکومت تشکیل دی ہے۔

حکومت سازی کے ایک غیر معمولی سمجھوتے کے تحت نفتالی بینیٹ دو سال کے لیے وزیرِ اعظم ہیں جس کے بعد آئندہ دو برس کے لیے یائر لیپڈ وزارتِ عظمیٰ کا عہدہ سنبھالیں گے۔

اس خبر میں شامل بعض معلومات خبررساں ادارے ‘رائٹرز’ اور نشریاتی ادارے ‘بی بی سی’ سے لی گئی ہیں۔



Source link

Leave a Reply