تاپسی پنو حکومت مخالف مظاہرین کی حق میں آواز اٹھاتی رہی ہیں۔ فوٹو اے ایف پی

تاپسی پنو کے گھر سے پانچ کروڑ کی رسید برآمد، ’اب اتنی سَستی نہیں رہی‘

تاپسی پنو کے گھر سے پانچ کروڑ کی رسید برآمد، ’اب اتنی سَستی نہیں رہی‘

انڈیا میں جاری کسانوں کے احتجاج کی حمایت میں بولنے والی بالی وڈ اداکارہ تاپسی پنو کی رہائش گاہ پر محکمہ انکم ٹیکس کے چھاپے میں مبینہ طور پر پانچ کروڑ انڈین روپے کی رسید برآمد ہوئی تھی۔
تاپسی پنو نے سنیچر کو اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر محکمہ انکم ٹیکس کے چھاپے کے حوالے سے ٹویٹس کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’تین دن مسلسل کی جانے والی تلاشی میں ان کے پیرس میں مبینہ بنگلے کی چابیاں بھی ملی ہیں۔‘
انہوں نے ٹویٹ میں مزید کہا کہ وہ پانچ کروڑ انڈین روپے کی مبینہ رسید فریم کروا کر لگائیں گی اور آئندہ فملوں کا معاوضہ مانگنے کے لیے استعمال کریں گی، کیونکہ انہیں اتنی رقم دینے سے انکار کا سامنا رہا ہے۔

تاپسی پنو نے 5 کروڑ روپے کی رسید کے حوالے سے ٹویٹ میں کہا کہ اب وہ اتنی سَستی نہیں رہیں۔
انڈین این ڈی ٹی وی کے مطابق ہدایتکار انوراگ کشیاپ کے گھر پر بھی محکمہ انکم ٹیکس نے چھاپا مارا ہے۔
انڈیا کے شہر پونے میں تاپسی پنو سمیت انوراگ کشیاپ سے بھی متعلقہ اہلکاروں نے پوچھ گچھ کی ہے۔
پونے کے علاوة ممبئی میں بھی 30 مقامات پر محکمہ انکم ٹیکس نے چھاپے مارے ہیں۔
ہدایتکار انوراگ کشیپ اور تاپسی پنو انڈین حکومت پر تنقید کرتے رہے ہیں اور کسانوں کے احتجاج سمیت دیگر مظاہرین کے حق میں بھی آواز اٹھاتے رہے ہیں۔
حال ہی میں تاپسی پنو نے مشہور شخصیات کو امریکی گلوکارہ ریہانا کے خلاف اور حکومت کے ساتھ اظہار یکجہتی کرنے پر بھی تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔
3. My memory of 2013 raid that happened with me according to our honourable finance minister

P.S- “not so sasti” anymore

— taapsee pannu (@taapsee) March 6, 2021

فروری میں گریمی انعام یافتہ گلوکارہ ریہانا نے ‘فارمرز پروٹیسٹ’ کے ہیش ٹیگ کے ساتھ سی این این کی ایک خبر کو پوسٹ کرتے ہوئے لکھا کہ ‘ہم لوگ اس کے بارے میں بات کیوں نہیں کر رہے ہیں۔‘
سیاسی حلقوں میں بھی انوراگ کشیپ اور تاپسی پنو کے گھر پر چھاپے کی تنقید کی جا رہی ہے۔
ریاست مہاراشٹرا کے وزیر نواب ملک نے محکمہ انکم ٹیکس کے اس اقدام کو بالی وڈ شخصیات کی آوازیں دبانے کی ایک کوشش قرار دیا ہے۔
ایک اور سیاستدان تیجاشوی یادو نے ٹویٹ کیا کہ ’نازی حکومت اب سماجی کارکنان، صحافیوں اور فنکاروں کا پیچھا کر رہی ہے تاکہ سچ بولنے پر انہیں دھمکیاں دی جائیں۔

Leave a Reply