دنیا کی 8 قدیم ترین چیزیں جو کئی دہائیاں گزرنے کے باوجود قابلِ استعمال ہیں

یہ تو 123 سال پرانا ہے لیکن آج بھی کارآمد ہے، دنیا کی 8 قدیم ترین چیزیں جو کئی دہائیاں گزرنے کے باوجود قابلِ استعمال ہیں

قدیم چیزیں ہم میں سے بہت سے لوگوں کو متوجہ کرتی ہیں، اور اگر یہ استعمال کے قابل بھی ہوں تو ان سے دوگنا لطف آتا ہے۔ جیسا کہ ہمارے آج کے آرٹیکل میں دکھائی جانے والی چند قدیم ترین چیزیں ہیں جو کئی دہائیاں گزرنے کے باوجود آج بھی قابلِ استعمال ہیں-

یہ 82 سال پرانی قینچی ہے جس کی دھار آج بھی تیز ہے-

1940 کی الارم کلاک جو آج بھی کارآمد ہے اور پہلے دن کی طرح اپنی خدمات سرانجام دے رہی ہے-

1902 میں بنایا جانے والا یہ بلب ایک صدی سے زائد عرصہ یعنی 123 سال گزرنے کے باوجود آج بھی روشنی پھیلا رہا ہے-

1973 میں بنایا جانے والا ایک کوٹ جو تقریباً 50 سال گزرنے کے باوجود قابلِ استعمال ہے-

پینا سونک کمپنی کا 1970 کا الارم کلاک جو کہ ایک ریڈیو بھی ہے اور طویل عرصہ گزرنے کے باوجود آج بھی کام کر رہا ہے-

واقعی پہلے دور کی اشیاﺀ پائیدار ہوتی تھیں- 1940 میں بنایا جانے والا مکسر جو 80 سال گزرنے کے بعد بھی قابلِ استعمال ہے-

یہ جیبی گھڑی ہے جو 1892 سے تعلق رکھتی ہے- اس ڈیزائن اس کے دور کی عکاسی کرتا ہے-

80 کی دہائی ایک بریسلٹ جس کی چمک دمک آج بھی ویسی کی ویسی ہے-

Leave a Reply